Documentary

Jalal Chandio Biography – Documentary, 100% Best English & Urdu

 

Jalal Chandio - Documentary, Biography, 100% Best English & Urdu

 

Jalal Chandio Biography and he is the best artist of Sindhi he has sung a lot of great songs and he was the most acclaimed artist of Sindhi classical music, he sang Sindhi Sufi music, Sindhi folk music, and Sindhi film songs, and he was the first artist of Sindh, and a Sindhi film was also made in his name.

He sang super-hit stylish music when he started singing on Chapri and Yektaro. His songs touched the heart, his loud and stylish poetry, especially in Sindhi and Seraiki languages. They were touching.
 
He sang to many Sindhi poets, especially Hazrat Shah Abdul Latif Bhattai R.A, Hazrat Sachal Sarmast R.A, and other poets of Sindh. He was one of the great Sindhi artists who ruled and influenced Sindhi folk music, Sindhi classical music, and Sindhi folk music more than anyone else and also Jalal Chandio Biography.

Jalal Chandio was the first artist of Sindh. He introduced a new style of folk music and classical music to the street coaches of Sindh. Also, listen to the best Jalal Chandio Biography in the Urdu language.

During his lifetime, Jalal Chandio released over a thousand audio cassettes as well as ten thousand songs and his folk songs were heard in the rural areas of Sindh. I used to come together like music lovers, and dance to the tune of Jalal Chandio.

Jalal Chandio was called the king of Sindhi singers because he promoted Sindhi songs almost all over Sindh and Pakistan, in the days when media was not common, but his songs were very much liked by music fans through audio cassettes. And waiting for each new album.

Jalal Chandio Biography and Documentary in Urdu 

Jalal Chandio was born in 1944 in Goth Misri Wah, Phal, District: Nowshero Feroze Sindh and he made a name for himself in Sindhi music. He was the son of a farmer and after falling in love he became a singer. 
 
You Also Like: Documentary Ali Muhammad Taji, Documentary Muhammad Ibrahim

He was uneducated and has sung over 10,000 songs in his career which is a great record. Jalal Chandio was a singer of love. He used to decorate Yektaro and Chapri. Lisen in uru Jalal Chandio Biography.

With his brilliant voice, he had a magical effect on thousands of listeners, and people danced and sang along with him.

Best Sindhi Classical Muisic Ustad Jalal Chandio

Jalal Chandio sang thousands of great songs, and each of his songs became the most popular in this era. The following are the most famous and sought-after Sindhi words.

  • Aao Ko Jana Pandh Kech Jo
  • Disi Akhiyoon Thakyoon
  • Hal Na Sharabi Chaal Mata Ka Nazar Lagai
  • Sindhi Lok Dastan Moomal Rano
  • Ganday Neehan Naato
  • Kon Aahiyan Maa Pagal
  • Jogi Jawan Jabal Ji Pase

The music of the Sindh region is sung in Sindhi and the kalam is usually performed in either “Y”. Y, commonly called Old Sindhi Coffee, is a folk song sung in some parts of Balochistan, Punjab, and Rajasthan in India.

Hazrat Shah Abdul Latif Bhattai (may Allah have mercy on him) has a standard collection of 30 heads of Shah Jo Risalo which has been sung by Jalal Chandio as a melody. Y is sung in most 36 heads of Shah Jo magazine, but later most experts say that Y is present in 30 heads and is sung.

Sindhi folk music which is one of the common folk songs of Sindh is appreciated and is still popular in India and the Sindh region in different old traditional periods listen to Jalal  Chandio biography.

Its central standards were set only in some places between 1550 and 1900, known as the length of common practice time and the sarcastic history of the time where traditional music was sung by experts. Entertainers who fully understand ordinary music are said to be “generally orchestral”.

This process can begin with the private practice of instrument or voice instructors or in the past acknowledgment of a common program offered by a studio, school, or school. Further, listen to Urdu Jalal Chandio Biography. In the Sindh region, a few classical music teachers have performed traditional music in Yektaro and Chapri and listened in Urdu to the best Jalal Chandio Biography.

Jalal Chandio’s name tops the list of Shah’s magazines, “Sir”, especially the traditional Bhervi. This legendary great artist of Sindh passed away on January 10, 2001.

 
 
جلال چانڈیو 1944 میں گوٹھ مصری واہ، پھل ، ضلع: نوشہرو فیروز سندھ میں پیدا ہوئے اور انہوں نے سندھی موسیقی میں بڑا نام پیدا کیا۔ وہ ایک کسان کا بیٹا تھا اور محبت کرنے کے بعد گلوکار بن گیا۔ وہ ان پڑھ تھے اور انہوں نے اپنے کیریئر میں 10,000 سے زیادہ گانے گائے ہیں جو بہت بڑاریکارڈ ہے۔
 
جلال چانڈیو سندھی کلاسیکی موسیقی کے سب سے زیادہ مانے  ہوئے فنکار تھے، انہوں نے سندھی صوفی میوزک، سندھی لوک میوزک، سندھی فلمی گانے گائے، وہ سندھ کے پہلے فنکار تھے، ان کے نام پر ایک سندھی فلم  بھی بنی۔
 
اس نے ایک سپر ہٹ اسٹائلش میوزک گایا تھا جب اس نے چپری اور یکتارو پر گانا شروع کیا تھا تو ان کے گانے دل کو چھو گئے تھے، ان کی بلند آواز اور شاعری کے اسٹائلش اشعار، خاص طور پر سندھی اور سرائیکی زبانوں میں روحانیت کو چھونے والے تھے۔
 
انہوں نے بہت سارے سندھی شاعروں کو گایا خاص طور پر انہوں نے “حضرت شاہ عبداللطیف بھٹائی رحمۃ اللہ علیہ”، “حضرت سچل سرمست رحمتہ اللہ علیہ” اور سندھ کے دیگر شعراء کو گایا۔ وہ ان عظیم سندھی فنکاروں میں سے ایک تھے جنہوں نے سندھی لوک موسیقی، سندھی کلاسیکی موسیقی، اور سندھی لوک موسیقی پر راج کیا اور اسے اس سے زیادہ متاثر کیا جتنا کوئی اور نہیں کرسکتا تھا۔
 
جلال چانڈیو سندھ کے پہلے فنکار تھے، انہوں نے پورے سندھ کے گلی کوچوں میں فوک میوزک اور کلاسیکی موسیقی کا نیا انداز متعارف کروایا، 1980 کے دور میں وہ پہلے فنکار تھے جنہوں نے  اپنے کلام سندھ کے  دیہی علاقوں اور شہری علاقوں کے کونے کونے میں گائے  تھے۔
 
جلال چانڈیو نے اپنی زندگی کے دوران ایک ہزار آڈیو کیسٹس کے ساتھ ساتھ دس ہزار گانے بھی ریلیز کیے اور ان کے لوک موسیقی کے گیت سندھ کے دیہی  علاقوں میں سننے کو ملے اور جب لوگوں نے کسی محفل میں دستیاب ہونے کی تصدیق کی تو وہ گروپس میں اکٹھے ہو کر موسیقی سے محبت کرنے والوں کی طرح آتے تھے، اور جلال چانڈیو کے راگ پر رکس کرتے تھے۔
 
جلال چانڈیو کو سندھی گلوکاروں کا بادشاہ کہا جاتا تھا کیونکہ انہوں نے سندھی گانوں کو تقریباً پورے سندھ اور پاکستان میں پروموٹ کیا، ان دنوں جب میڈیا عام نہیں تھا، لیکن آڈیو کیسٹوں کے ذریعے ان کے گانوں کو بہت زیادہ موسیقی کے شائقین   نے پسند کیا اور ہر نئے البم کا  انتظار کرتے تھے۔
 

سندھی کلاسیکی موسیقی گلوکار جلال چانڈیو کی سوانح عمری۔

جلال چانڈیو محبت کے گلوکار تھے، وہ  یکتارو اور چپڑی کو سجایا کرتے تھے، انہوں نے مقبول سندھی تال کی دھن کلوارو، اڈھو، ڈیدھو اور ایکتا میں گایا۔ اپنی شاندار آواز سے وہ ہزاروں سامعین پر جادو  کی طرح  اثر کرتا تھا،   لوگ ان کے  ساتھ مل کر گانے پر رقص بھی کیا کرتے تھے۔
 
جلال چانڈیو نے ہزاروں عظیم گانے گائے، ان کا ہر گانا اس دور میں سب سے زیادہ مقبول ہوئے آپ کے درج ذیل سب سے مشہور اور مانگے جانے والے سندھی  کلام ہیں ۔
 
 
آؤ کو جانا پنڈ کیچ جو
  ڈسی  اکھیوں تھکیوں
ہل نہ شرابی چال متا  کا نظر لگی
سندھی لوک داستان مومل رانو
گنڈھے نیہں ناتو
کون آہیاں ماں پاگل
جوگی جوان جبل جی پاسے ۔
 
سندھ کے علاقے کی موسیقی سندھی میں گائی جاتی ہے اور عام طور پر کلام  یا تو “وائی” میں پیش کی جاتی ہے۔ وائی، جسے عام طور پر پرانی سندھی کافی کہا جاتا ہے، لوک موسیقی بلوچستان، پنجاب اور ہندوستان کے راجستان ک کچھ کےعلاقوں میں گائی  جاتی ہے۔
 
حضرت شاہ عبداللطیف بھٹائی رحمۃ اللہ علیہ کے شاہ جو رسالو کے معیاری مجموعہ 30سروں   کے  کافیز جنہیں جلال چانڈیو نے راگ کے طور پر گایا ہے۔ شاہ جو رسالو کی سب سے زیادہ 36 سروں میں وائی گائی جاتی ہے ، لیکن بعد میں اکثر ماہرین  کا کہنا ہے ہ 30سروں    میں وائی موجود ہے اور گائی جاتی ہے۔
 
سندھی لوک موسیقی جو سندھ کے عام عوامی گانوں میں شامل ہوتی ہے اس کی تعریف کی جاتی ہے اور ہندوستان اور سندھ کے علاقے میں پرانے روایتی  مختلف ادوار میں ابھی تک مشہور ہے۔ اس کے مرکزی معیارات کو صرف 1550 اور 1900 کی حد میں کچھ جگہ پر منظم کیا گیا تھا، جسے عام مشق کے وقت کی لمبائی اور اس وقت کی سریلی تاریخ کے طور پر جانا جاتا ہے جہاں ماہرین کے ذریعہ روایتی موسیقی گا ئی جاتی تھی ۔
 
 
تفریحی افراد جنہوں نے عام موسیقی کو مکمل طور پر سمجھا ہے انہیں کہا جاتا ہے کہ وہ “عام طور پر آرکیسٹریٹ” ہیں۔ عمل کا یہ طریقہ آلہ یا آواز کے اساتذہ کی نجی مشقوں سے شروع ہوسکتا ہے یا سابقہ وقت میں کسی اسٹوڈیو، اسکول یا اسکول کے ذریعہ پیش کردہ عام پروگرام کے اعتراف سے ہواتھا۔
 
سندھ کے علاقے میں، کلاسیکی موسیقی کے چند اساتذہ نے یکتارو اور چاپری میں روایتی موسیقی کا مظاہرہ کیا ہے۔ شاہ جو رسالو، “سر”، خاص طور پر روایتی بھیروی بھی شامل ہے اس میں جلال چانڈیو کا نام سرفہرست ہے۔ سندھ کا  یہ لیجنڈری عظیم فنکار 10 جنوری 2001  اس فانی دنیا   سے چلے گئے ۔
 
استاد جلال چانڈیو کے بہترین کلام فری میں ڈائون لوڈ کریں

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published.

Back to top button